شاعر : راشد جاوید احمد

کون ہو تم
آیئنہ تو دیکھو
خوردہ سال سفید ہوتی آنکھیں
حُسن دیکھنے سے عاری
کٹے پھٹے
لرزتے ہونٹ
تعریف سے عاری
آنکھیں تو وہ ہیں
جو دیکھتے نہیں تھکتیں
ہونٹ تو وہ ہیں
جو ہمہ وقت
رطب اللساں
اپنا منصب پہچانو
تمہارے عوض تو
کانچ کا ایک گلاس نہ ملے
صرف دل پر مان کرتے ہو
اسکا کیا، کب تھم جائے
مجھے اپنا مستقبل
تاریک نہیں کرنا
ڈیلیوں انھا
تے
ساوی دا عاشق

Share This Post
راشد جاوید احمد کا تعلق علامہ اقبال ٹاون لاہورسے ہے۔یہ ریٹائرڈ بنک ایگزیکٹو ہیں ۔افسانہ نگار۔ ڈرامہ نگار۔ کاپی رائٹر۔ بلاگر ہیں ، پین سلپس میگزین کے نام سے ہفتہ وار اردو/پنجابی ای میگزین بھی شائع کرتے ہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>