شبِ معراج پر اشعار

شبِ معراج shab e meraj poetry اردو

شبِ معراج قربِ الہی کے اعلی ترین اوقات میں سے ایک ایسی شب ہے جس میں اللہ تعالی نے اپنے نبی کو اپنی بارگاہ میں طلب کیا۔ نہ اِس سے پہلے کبھی کوئی انسان عرشِ خداوندی کی زیارت کر سکا، نہ نبی کریم ﷺ کے بعد کبھی ایسا ہوا۔ یہ سعادت حضرت محمد ﷺ ہی کو ملی اور انہی کے طفیل امتِ محمدی ﷺ کو یہ شرف حاصل ہوا کہ اس بابرکت رات میں عبادت کر سکے، اور خدا سے اپنے گناہوں کی معافی طلب کر سکے۔ اردو کی اسلامی شاعری میں شبِ معراج کے متعلق بہت سے شعراء نے بہترین شعر تخلیق کیے ہیں۔ آئیے چند ایسے عمدہ اشعار پڑھتے ہیں۔

شبِ معراج شاعری

شبِ معراج فرشتوں کا عقیدہ سنتے
نور کے لہجے میں اوصافِ حمیدہ سنتے
اے خوشا ہوتے جو نعلین سے مَس ذرہ اگر
ہم بھی جبریل سے آقا ﷺ کا قصیدہ سنتے
صفدر ہمدانی
۔
انہیں تو عش پر محبوب کو بلانا تھا
طلب تھی دید کی معراج تو بہانہ تھا
نامعلوم
۔
اخترِ شام کی آتی ہے فلک سے آواز
سجدہ کرتی ہے سحر جس کو، وہ ہے آج کی رات
علامہ اقبال (بانگِ درا)
۔
لکھوں معراج کے مضمون بنا کر میں قلم
ہاتھ آئیں پرِ جبریل اگر آج کی رات
امیر مینائی

ہے مختصر یہی افسانہ ء شبِ معراج
جہاں سے کوئی نہ گزرا وہاں سے گزرے ہیں
جون ایلیاء
۔
معراج کی شب سفر پہ جب والی ء امت چلے
ان وسعتوں، ان رفعتوں اور قربتوں کی بات ہو
یا الہی ڈھانپ لے مظہری کے عیب تو
لغزشوں کی بات نہ ہو رحمتوں کی بات ہو
۔
وہ سرور کشور رسالت جو عرش پر جلوہ گر ہوئے تھے
نئے نرالے طرب کے ساماں عرب کے مہان کے لئے تھے
نامعلوم
۔
وہ شبِ معراج راج، وہ صفِ محشر کا تاج
کوئی بھی ایسا ہوا، تم پہ کروڑوں درود آج

مانگ لو مانگ لو چشمِ تر مانگ لو
مانگنے کا مزا آج کی رات ہے
۔
شبِ معراج کی باتیں کوئی کیا دوسرا جانے ہے
خدا کیا ہے نبی جانے، نبی کیا ہے خدا جانے
جنید جمشید
۔
شبِ معراج مکہ سے جو حق کے کارواں چلے
اوپر قدم حضور کے تھے سات آسماں چلے
۔
کیا خوب جما وصل کا نقشہ شب معراج
مطلوب نیا طالب شیدا شب معراج
عبدالحلیم شرر
۔
آج شب معراج ہوگی اس لیے تزئین ہے
وہ قدم اٹھے ہیں جن کو آسماں قالین ہے
اورنگ زیب

وصل چاہا شب معراج تو یہ عذر کیا
ہے یہ اللہ و پیمبر کی ملاقات کی رات
امیر مینائی
۔
سبق ملا ہے یہ معراج مصطفی سے مجھے
کہ عالم بشریت کی زد میں ہے گردوں
علامہ اقبال

Share This Post
Written by مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>